بات منوانے کے لئے طلاق کی دھمکی


سوال: مجھے یہ پوچھنا ہے کہ میں نےبات منوانے کی غرض سے اپنی بیوی کوڈرانے کے لیے کہا: ’’میں اس کے بارے میں فیصلہ کرلیتا ہوں اور اس کو فارغ کردیتا ہوں۔‘‘ کیا اس سے طلاق واقع ہوجائے گی؟ (بندہ، کراچی)

جواب: سائل کے اپنے سوال میں سچا ہونے کی صورت میں حکم شرعی یہ ہے کہ صورتِ مسئولہ میں طلاق نہیں ہوئی، کیوں کہ آپ کا یہ کہنا کہ ’’میں اس (یعنی بیوی)کے بارے میں فیصلہ کرلیتا ہوں اور اس کو فارغ کردیتا ہوں‘‘یہ طلاق کا ارادہ کرنا ہے،اور ارادۂطلاق سے طلاق نہیں ہوتی۔فتاوٰی امجدیہ میں ہے: ارادۂ طلاق سے طلاق واقع نہیں ہوتی۔(فتاوٰی امجدیہ :ج۲،ص۲۳۴)

واللہ تعالٰی اعلم ورسولہ اعلم۔

Ziae Taiba Monthly Magazine in Karachi